اداروں سےاختلاف ہوسکتا ہے لیکن شہداء کے ساتھ ایسا رویہ’’ایبسولوٹلی ناٹ‘‘

لاہور(قدرت روزنامہ)وزیردفاع خواجہ آصف نے کہا ہے کہ اداروں سے اختلاف ہوسکتا ہے لیکن ایسا رویہ ایبسولوٹلی ناٹ، ایسے لوگ پیدا ہوگئے جو شہداء کا مذاق اڑاتے ہیں . انہوں نے آج یہاں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اقتدار آنی جانی چیز ہے اس کو ملکی بقاء سے مشروط نہ کریں، ایسے لوگ پیدا ہوگئے جو شہداء کا مذاق اڑاتے ہیں، ہمیں بیرونی دشمنوں کی ضرورت نہیں، دشمن اب ہمارے اندر موجود ہے، اداروں سے اختلاف ہوسکتا ہے لیکن ایسا رویہ ایبسولوٹلی ناٹ، ہم نیوز کے مطابق وزیردفاع خواجہ آصف نے کہا کہ لسبیلہ میں ہیلی کاپٹر حادثے میں فوجی افسران کی شہادت پر قوم افسردہ ہے، فوجی افسران نےامدادی کارروائیوں کے دوران جام شہادت نوش کیا، دفاعی اداروں کےخلاف مذموم مہم قابل مذمت ہے، شہیدوں کو سیاسی موضوع بنانا اچھی بات نہیں، سیاست کبھی اتنی نہیں گری تھی جتنی آج گری ہے، منفی مہم چلانے والوں کی باقاعدہ سرپرستی کی جاتی ہے، دشمن پاکستان کو کمزور کرنا چاہتا ہے، منفی پراپیگنڈے سے ملکی سالمیت کو نقصان پہنچ سکتا ہے، 2018 میں قوم پرایک شخص کو مسلط کیا گیا .


خواجہ آصف نے کہا کہ یہ ادارے ہماری سرحدوں کی حفاظت کرتے ہیں، گالم گلوچ احسان فراموش لوگوں کا کام ہے، ہمارا معاشرہ ایسا نہیں تھا نہ ہماری ایسی سیاسی روایات ہیں، پہلے تنقید ہوتی تھی تو ایک دائرہ کار میں رہتے ہوئے ہوتی تھی، یہ کون سا معاشرہ بن گیا، کس نے اس معاشرے کو جنم دیا، اگر اقتدار ان کے پاس ہے تو سب اچھا ہے، رواداری کو فروغ دینا چاہیے، سیاسی کلچر کو تباہ نہ کریں . خواجہ آصف نے کہا کہ میری دانست میں تمام حدیں پار ہوئی ہیں، کارروائی کا مطالبہ کروں گا تو کہا جائے گا سیاسی انتقام لے رہا ہے، کارروائی کرنے کیلئے ادارے موجود ہیں .

. .
Ad
متعلقہ خبریں