نسیم شاہ اور شاہین آفریدی کی جوڑی بلے بازوں کیلئے ڈراؤنا خواب ثابت ہوگی : مہیلا جے وردھنے

لاہور (قدرت روزنامہ) لیجنڈری سری لنکن بلے باز مہیلا جے وردھنے نے کہا ہے کہ اگلے ماہ آسٹریلیا میں ہونیوالے آئی سی سی مینز ٹی ٹونٹی ورلڈ کپ 2022ء سے قبل شاہین شاہ آفریدی کے ساتھ ساتھ نوجوان تیز گیند باز نسیم شاہ کا ابھرنا پاکستان کیلئے سب سے بڑا مثبت قدم ثابت ہوا ہے . کپتان بابر اعظم کی فارم ٹورنامنٹ کے 2021ء ایڈیشن کے سیمی فائنلسٹ کیلئے قدرے تشویش کا باعث ہے تاہم جے وردھنے کو لگتا ہے کہ پاکستانی تیز گیند باز بالخصوص شاہین آفریدی اور نسیم شاہ کسی بھی دن میچ جیتنے والے ہیں .


19 سالہ نسیم شاہ نے متحدہ عرب امارات میں ایشیا کپ کے دوران 5 میچوں میں 7.66 کی اکانومی سے 7 وکٹیں حاصل کیں اور انکی بیٹنگ کو بھی سراہا گیا کیونکہ انہوں نے افغانستان کبخلاف دو چھکے لگائے .
جے وردنے نے آئی سی سی ریویو پر کہا کہ میں ابھی کچھ عرصے سے نسیم کو دیکھ رہا ہوں . ظاہر ہے، انہوں نے اسے اس کی رفتار کی وجہ سے ٹیسٹ کرکٹ میں بہت زیادہ استعمال کیا ہے .

انہوں نے وائٹ بال فارمیٹ میں نسیم پر زیادہ بھروسا نہیں کیا لیکن حال ہی میں بہت ساری کرکٹ کھیلی جارہی ہے اور نسیم بھی ابھر کر سامنے آیا ہے اور اس نے خاص طور پر نئی گیند سے جو کنٹرول دکھایا اور وکٹیں لیں، یہی کلیدی عنصر ہے . جے وردھنے کا کہنا تھا کہ شاہین آفریدی کی واپسی کے ساتھ ساتھ پاکستان کا بائولنگ اٹیک بہت زیادہ مضبوط نظر آئے گا، جس طرح سے حارث رؤف نے بولنگ کی ، دونوں نوجوانوں پیسرز سمیت ان کے پاس واقعی ایک اچھا فاسٹ باولنگ یونٹ ہے، نسیم شاندار گیند باز ہے، جس طرح اس نے رائٹ ہینڈ بلے باز کو ان سوئنگ کی اور جس رفتار سے اس نے گیند سوئنگ کی وہ متاثر کن تھا .
جے وردھنے کا کہنا تھا کہ آسٹریلیا کی کنڈیشنز میں شاہین اور نسیم کافی فائدہ مند ثابت ہوں گے، چند اوپننگ بلے بازوں کے لیے یہ ایک ڈراؤنا خواب ہوگا اگر شاہین اور نسیم دونوں مل کر بولنگ کریں .

. .
Ad
متعلقہ خبریں