آٹے کی قیمتوں میں اضافے پر پشاور ہائیکورٹ کا نوٹس

پشاور (قدرت روزنامہ) آٹے کی قیمتوں میں اضافے پر پشاور ہائیکورٹ نے نوٹس لے لیا،عدالت نے محکمہ خوراک کے وفاقی اور صوبائی حکام کو کل طلب کر لیا . اے آر وائے نیوز کے مطابق پشاور ہائیکورٹ نے وفاقی اور صوبائی سیکرٹری فوڈ اور ڈائریکٹر کو کل پیش ہونے کا حکم دیا ہے .

چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ جسٹس قیصر رشید خان نے ریمارکس دئیے کہ عوام آٹے کیلئے ٹھوکریں کھا رہی ہے اور کوئی پوچھنے والا نہیں،وفاقی اور صوبائی حکومتیں عوام کو ریلیف فراہم کرنے میں ناکام ہو گئی ہیں .
یاد رہے کہ ملک کے مختلف شہروں میں کہیں آٹے کا بحران ہے تو کہیں قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہو گیا ہے . جہاں آٹا دستیاب وہاں شہریوں کی طویل قطاریں دکھانے میں نظر آ رہی ہیں جبکہ پشاور میں آٹے کی قیمتوں میں حالیہ اضافے کے بعد نان بائیوں نے روٹی کی قیمت میں 10 روپے کا من مانا اضافہ کر دیا ہے .
پشاور میں نان بائیوں کی جانب سے 170 گرام کی روٹی پر 10 روپے بڑھا دئیے گئے اور 20 روپے کی روٹی اب 30 روپے میں فروخت کی جا رہی ہے .

اس حوالے سے نان بائی ایسوسی ایشن کے ترجمان کا کہنا ہے کہ آٹے کی حالیہ قیمت میں اضافے کے باعث روٹی کی قیمت بڑھانا ہماری مجبوری ہے . جبکہ ضلعی انتظامیہ کے مطابق روٹی کی قیمت 20 روپے مقرر ہے،نانبائیوں نے روٹی کی قیمت میں ازخود اضافہ کیا،روٹی مقررہ ریٹ سے زائد قیمت پر فروخت کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے گی . گزشتہ روز کوئٹہ میں سرکاری آٹے کی عدم فراہمی اور قیمتوں میں اضافے کےخلاف شہریوں نے ریلوے اسٹیشن کے قریب احتجاج کرتے ہوئے زرغون روڈ بلاک کیا .
احتجاج میں خواتین کی بڑی تعداد بھی شامل تھی جنہوں نے شدید نعرے بازی کی . مظاہرین نے کہا کہ مہنگائی اور آٹے کی بڑھتی ہوئی قیمتوں نے ہماری زندگیاں اجیرن بنادی،مارکیٹ میں 20 کلو آٹے کا تھیلا 2800 روپے میں فروخت ہورہا ہے .

. .

متعلقہ خبریں