فواد چوہدری کی گرفتاری لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دی گئی

لاہور (قدرت روزنامہ)تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کی گرفتاری کو عدالت میں چیلنج کر دیا گیا ہے . تفصیلات کے مطابق فواد چوہدری کو پولیس نے لاہور سے گرفتار کر لیا ہے،رہنما تحریک انصاف کی گرفتاری کیخلاف لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی،درخواست احمد پنسوتا ایڈووکیٹ کی جانب سے دائر کی گئی .

درخواست گزار نے مؤقف اختیار کیا ہے کہ فواد چوہدری کی گرفتاری غیر قانونی ہے،رہنما تحریک انصاف کو ایف آئی آر تک نہیں دکھائی گئی،پولیس نے گرفتاری کی وجوہات نہیں بتائیں،فواد چوہدری سپریم کورٹ کے وکیل اور سابق وفاقی وزیر ہیں .
فواد چوہدری کی گرفتاری کیخلاف لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست سماعت کیلئے مقرر کر دی گئی ہے . دوسری جانب لاہور کی مقامی عدالت نے تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کا راہداری ریمارنڈ منظور کر لیا .
کینٹ کچہری میں فواد چوہدری کے راہداری ریمانڈ کی درخواست پر سماعت ہوئی،عدالت نے فواد چوہدری کا راہداری ریمانڈ مںظور کر لیا،عدالت نے فواد چوہدری کو اسلام آباد لے جانے کی اجازت دے دی،عدالت نے پی ٹی آئی رہنما کا میڈیکل کرنے کا حکم دے دیا اور قرار دیا کہ فواد چوہدری کا طبی معائنہ کروا کر اسلام آباد لے جایا جائے .

پولیس رہنما تحریک انصاف کو کینٹ کچہری سے لیکر روانہ ہو گئی ہے . عدالت نے گرفتار پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری کا میڈیکل کروانے کی استدعا منظور کی،پی ٹی آئی رہنما فواد چوہدری کو عدالت میں پیش کیا گیا . فواد چوہدری کے وکلا بھی کمرہ عدالت میں موجود تھے، تفتیشی افسر نے مقدمے کی کاپی اور فواد چوہدری کی گرفتار کی رپورٹ عدالت میں جمع کروا دی . اس موقع پر فواد چوہدری نے فاضل جج سے استدعا کی کہ مجھے ایف آئی آر کی کاپی دی جائے اور میرا میڈیکل کرانے کا حکم دیا جائے،عدالتی حکم پر فواد چوہدری کو ایف آئی آر کی کاپی دے دی گئی اور عدالت نے گرفتار پی ٹی آئی رہنماء کا میڈیکل کروانے کی استدعا بھی منظور کرلی .

. .

متعلقہ خبریں