مقابلہ حسن جیتنے والی باحجاب ماڈل سے متعلق بڑا انکشاف

رباط (قدرت روزنامہ) حال ہی میں مقابلہ حسن جیتنے والی باحجاب ماڈل نے سب کی توجہ حاصل کرلی ہے، تاہم اس ماڈل سے متعلق اب نیا انکشاف بھی سامنے آیا ہے .

نجی ٹی وی آج نیوز کے مطابق ماڈل کنزہ لیلی نے 1500 دیگر ماڈلز کو شکست دے کر کر مقابلہ حسن جیت لیا ہے، جبکہ 10 ہزار یورو بھی جیت لیے ہیں، جو کہ پاکستانی 30 لاکھ سے زائد کی رقم بنتی ہے .

تاہم اس ماڈل سے متعلق انکشاف کیا جا رہا ہے کہ یہ آرٹیفیشل انٹیلی جنس کی مدد سے تیار کی گئی ماڈل ہے جو کہ اب ’مس اے آئی‘ کے طور پر مقبولیت حاصل کر رہی ہے .

مراکش کی اس ماڈل کو کمپیوٹر اور 100 فیصد اے آئی کی مدد سے تیار کیا گیا ہے، جبکہ ماڈل کنزہ اپنے حجاب کے باعث بھی سب کی توجہ خوب سمیٹ رہی ہے .

حیرت انگیز طور پر ماڈل کنزہ کا انسٹاگرام اکاؤنٹ بھی ہے جس پر 1 لاکھ 38 ہزار فالوورز نے ماڈل کو جیتنے میں مدد کی .

جیت کے بعد کنزہ کے بنانے والوں کو 13 ہزار ڈالرز جو کہ پاکستانی 39 لاکھ روپے سے زائد کی رقم بنتی ہے، جبکہ اے آئی پلیٹ فارم ’فینویو‘ پر بھی پروموشنل سپورٹ ملے گی .

 

 
 
 
 
 
View this post on Instagram
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

A post shared by World AI Creator Awards (WAICA) (@waicas)

اس اے آئی ماڈل کی جانب سے ایوارڈ موصول کیا گیا تھا، جبکہ تقریب سے اظہار خیال بھی کیا گیا اور شکریہ بھی ادا کیا .

واضح رہے اس مقالہ حسن کے ججز میں آیتانا لوپز جو کہ اے آئی کی دنیا کے بڑے کریئیٹر، مقابلہ حسن کی معروف شخصیت سیلی این فاکیٹ اور مارکیٹنگ اور پبلک ریلیشن کے گرو اینڈریون بلوش نے حصہ لیا .

واضح رہے اس مقابلے میں ججز کی جانب سے ماڈلز کی اصل شخصیت، ٹیکنالوجی کا استعمال اور سوشل کلاؤٹ پر غور کیا گیا تھا، جبکہ اس مقابلے میں فرانس سے تعلق رکھنے والے اے آئی ماڈل لالینا ولینا دوسرے نمبر پر اور تیسرے نمبر پرتگال کی اولیویا سی رہی .

. .

متعلقہ خبریں