یو اے ای میں کورونا پابندیوں کی خلاف ورزی کی تو 10 دن کی تنخواہ کٹوا بیٹھیں گے

عجمان (قدرت روزنامہ) عجمان کے سرکاری محکمے کے ملازمین کو کووڈ سیفٹی پروٹوکول کی پابندی نہ کرنے پر تنخواہوں میں کٹوتیوں اور دیگر جرمانے کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے . خلیج ٹائمز کے مطابق سرکاری اداروں کے لیے ایک تازہ ترین سرکلر میں امارات کے انسانی وسائل کے محکمے نے دفتر میں کووِڈ سے بچاؤ کی خلاف ورزیوں اور ان کی سزاؤں کی وضاحت کی ہے جو درج ذیل ہیں؛
ماسک نہ پہننا .


ساتھیوں کے ساتھ ہاتھ ملانا .
کسی علاقے میں اس طرح جمع ہونا کہ سماجی دوری کی پابندی نہ ہو .
اگر کوئی ملازم اوپر دی گئی خلاف ورزیوں کا ارتکاب کرتا ہے تو اسے تحریری انتباہ جاری کیا جائے گا .
دوبارہ خلاف ورزی کا مطلب ایک دن کی تنخواہ کی کٹوتی ہے .

ایک اور خلاف ورزی پر ملازم 3 دن کی تنخواہ سے محروم ہوجائے گا .
کورونا مثبت ہونے یا علامات ہونے کے باوجود دفتر آنے پر 3 دن کی بنیادی تنخواہ کی کٹوتی ہوگی .
دوبارہ خلاف ورزی کرنے پر ملازم کو 5 دن کی بنیادی تنخواہ ادا کرنی پڑے گی .
تیسرے جرم کا مطلب ہے ملازمین 10 دن کی بنیادی تنخواہ کا نقصان برداشت کریں گے .
کووِڈ سیفٹی کو یقینی بنانے میں ناکامی پر ایک سپروائزر یا مینیجر کو تحریری انتباہ ہوگا .
دوبارہ جرم کرنے پر ایک دن کی بنیادی تنخواہ کی لاگت آئے گی .
تیسرے جرم پر 3 دن کی بنیادی تنخواہ میں کٹوتی ہوگی .
آجر کو قریبی رابطہ ہونے کے بارے میں مطلع کرنے میں ناکامی پر ملازم کی ایک دن کی بنیادی تنخواہ کاٹ لی جائے گی .
دوبارہ جرم کرنے پر اسے تین دن کی تنخواہ ادا کرنی پڑے گی .
تیسری بار جرم کرنے پر پانچ دن کی تنخواہ میں کٹوتی برداشت کرنا ہوگی .
الحوسن پر گرین پاس برقرار نہ رکھنے کی وجہ سے بھی اوپر جیسا ہی جرمانہ ہوگا .

. .
Ad
متعلقہ خبریں