بد قسمتی سے مسلم ممالک نے اسلامو فوبیا کے واقعات کے خلاف آواز نہیں اٹھائی ، وزیر اعظم عمران خان

اسلام آباد(قدرت روزنامہ)وزیر اعظم عمران خان نے او آئی سی وزرائے خارجہ کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بد قسمتی سے مسلم ممالک نے اسلاموفوبیا کے واقعات کے خلاف آواز نہیں اٹھائی ، گستاخانہ واقعات پر رد عمل نہ ہونے کے باعث ایسے واقعات دہرائے گئے .
وزیر اعظم عمران خان نے او آئی سی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دنیا میں ایک ہی اسلام ہے جو حضرت محمد ﷺ کا ہے ، کسی مذہب کا دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں ، اسلام کا تو قطعی دہشتگردی سے کوئی تعلق نہیں ،دنیا کے ہر کونے میں مسلمانوں کو اسلاموفوبیا کے واقعات کا سامنا ہے مگر اسلاموفوبیا کے واقعات پر مسلم ممالک کی جانب سے رد عمل سامنے نہیں آتا تھا ، 25 سال قبل سیاست میں آنے کا مقصد یہی تھا کہ اسلامو فوبیا کے خلاف آواز اٹھاؤں .


وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ نائن الیون کےبعدمسلمانوں کامغرب میں رہنامشکل ہوگیاتھا،اسلاموفوبیاکےنام پرہونیوالےواقعات پردنیاخاموش رہی جبکہ مسلم دنیانےبھی خاموشی اختیار کئے رکھی ، یہ پہلاموقع ہے کہ دنیانےاسلاموفوبیاکوایک حقیقت سمجھا، اسلاموفوبیاایک حقیقت ہے جس پر ہمیں اپنابیانیہ آگےبڑھاناہوگا، پاکستان واحدملک ہےجواسلام کےنام پربناہے، ہمیں اپنےبچوں کوریاست مدینہ کےبنیادی اصولوں سےآگاہی دینی ہے .
عمران خان نے مزید کہا کہ کرپشن کی وجہ سے ملکوں پرمعاشی دباؤ آتا ہے ، ترقی پذیر ممالک وسائل کی کمی کے باعث نہیں بلکہ کرپشن کے باعث تباہ ہو رہے ہیں ، دنیا ثقافتی اور اخلاقی طور پر دیوالیہ پن کی طرف جا رہی ہے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں