چین پاکستان کے خشک میوہ جات کی بڑی مارکیٹ بن گئی

شنگھائی(قدرت روزنامہ)چین پاکستان کے خشک میوہ جات کی بڑی مارکیٹ ہے ،2021 میں پاکستان سے چین کو چلغوزے اور خشک میوہ جات کی برآمدات 65 ملین ڈالر تک پہنچ گئیں . گوادر پرو کے مطابق پاکستان کے خشک میوہ جات کی برآمد کے بے شمار امکانات سے فائدہ اٹھانے کے لیے شنگھائی میں پاکستان کے قونصلیٹ جنرل نے ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے تعاون سے پاکستان سے چین کو خشک میوہ جات اور چلغوزے کی برآمد پر ایک ویبنار کا انعقاد کیا .

اس موقع پر شنگھائی میں پاکستان کے قونصل جنرل حسین حیدر نے کہا کہ 2021 میں پاکستان سے

چین کو چلغوزے اور خشک میوہ جات کی برآمدات 65 ملین ڈالر تک پہنچ گئیں، جو کہ 2020 میں 8 ملین ڈالر سے زیادہ ہے، جو کہ پاکستان کے خشک میوہ جات کی بڑی صلاحیت کو ظاہر کرتا ہے . پاکستان میں ایک مضبوط زرعی بنیاد اور معیاری خشک میوہ جات ہیں . چین پاکستان آزادانہ تجارتی معاہدے کے دوسرے مرحلے کے تحت، پاکستان چین کو خشک میوہ جات صفر ٹیرف کے ساتھ برآمد کرتا ہے، جو پاکستان کے لیے بہت فائدہ مند ہے . گوادر پرو کے مطابق سی جی نے مزید بتایا کہ چائنیز اسنیک فوڈ تیزی سے پھیلتی ہوئی مارکیٹ ہے اور اعلیٰ غذائیت والے اسنیکس زیادہ مقبول ہو رہے ہیں . چھوٹے پیکجوں کی ترجیح بڑھ رہی ہے اور آن لائن خریداری خریداری کا مروجہ طریقہ بنتا جا رہا ہے . چینی مارکیٹ کی ضروریات کو پورا کر کے پاکستانی خشک میوہ جات کی کمپنیاں کاروباری مواقع سے فائدہ اٹھا سکتی ہیں . گوادر پرو کے مطابق ویبینار میں چین اور پاکستان سے 20 سے زائد متعلقہ کمپنیوں نے شرکت کی . پاکستانی انٹرپرائزز نقل و حمل کے طریقہ کار کو آسان بنانے، ٹرانسپورٹ چینلز کو بڑھانے اور نقل و حمل کے اخراجات کو کم کرنے کی تجویز پیش کرتے ہیں . شنگھائی میں جاری وبا نے لوگوں کو کھانے پر زیادہ سے زیادہ توجہ دینے اور غذائیت سے بھرپور خوراک کی اہمیت کا احساس دلایا ہے جس سے قوت مدافعت بہتر ہو سکتی ہے اور اسے طویل عرصے تک محفوظ رکھا جا سکتا ہے . چینی تجارت، لاجسٹکس اور ای کامرس کے ادارے اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ پاکستان کی چین کو خشک میوہ جات کی برآمد کا مستقبل روشن ہے، اور وہ چین میں اپنی مقبولیت کو بڑھانے کے لیے نمائشوں اور دیگر چینلز کے ذریعے معیاری پاکستانی خشک میوہ جات کی نمائش کے لیے تیار ہیں . گوادر پرو کے مطابق پاکستان نے رواں مالی سال کے پہلے دس مہینوں (جولائی تا اپریل) کے دوران 185.2 ملین ڈالر مالیت کے آئل سیڈ، چلغوزے اورگری برآمد کیں جبکہ گزشتہ مالی سال کی اسی مدت کے دوران 84.6 ملین ڈالر کی برآمدات ہوئی تھیں، جس میں 118.93 فیصد کا اضافہ ظاہر کیا گیا ہے . پاکستان بیورو آف سٹیٹسٹکس (PBS) کو . اعداد و شمار کے مطابق، مقدار کے لحاظ سے، تیل کے بیجوں، گری دار میوے اور گری کی برآمدات میں بھی 76.06 فیصد اضافہ ہوا، جو کہ 77, 415 ایم ٹی سے بڑھ کر 136, 294 ایم تک پہنچ گیا . چین برسوں سے پاکستان کا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے . 2022 کے پہلے چار مہینوں میں چین نے کل 2.819 ملین ٹن خشک اور تازہ خربوزے اور چلغوزے درآمد کیے، جو کہ گزشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں 12.9 فیصد زیادہ ہے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں