یاسمین راشد کے قافلے پر بتی چوک کے قریب شیلنگ

لاہور (قدرت روزنامہ) پاکستان تحریک انصاف کی رہنما یاسمین راشد کے قافلے پر بتی چوک کے قریب شیلنگ کی گئی ہے . علاقہ میدانِ جنگ بن گیا ہے .

میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس اور پی ٹی آئی کے کارکنان آمنے سامنے آ گئے ہیں . پی ٹی آئی لانگ مارچ پر پولیس کی جانب سے شیلنگ کی گئی جس سے علاقہ میدان جنگ بن گیا . ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کارکنان نے بتی چوک سے رکاوٹیں ہٹا دی ہیں .
پی ٹی آئی رہنما حماد اظہر بھی بتی چوک پہنچ گئے ہیں . گذشتہ رات حماد اظہر نے بتایا تھا کہ میاں محمود رشید کے علاوہ لاہور کے تمام رہنما محفوظ ہیں . ہزاروں کارکن تیار ہیں . بتی چوک میں قوم اپنی خودداری کی راہ میں کوئی رکاوٹ نہیں آنے دے گی . رپورٹس کے مطابق لاہورمیں بتی چوک پر پی ٹی آئی کار کنوں کو حراست میں بھی لے لیا گیا ہے .

دوسری جانب ترجمان پی ٹی آئی نے کہا ہے کہ پولیس نے بدھ کے روز صبح سویرے سینیٹر اعجاز چوہدری کو ماڈل ٹاؤن سے گرفتار کیا جس کے بعد انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا .

ترجمان پی ٹی آئی کا کہنا ہے کہ ماڈل ٹاؤن پولیس دروازہ توڑ کر اعجاز چوہدری کے گھر میں داخل ہوئی اور سادہ لباس اہلکاروں نے پی ٹی آئی سینیٹر کو گرفتار کیا . اسی طرح تحریک انصاف کے سینئر رہنما میاں محمود الرشید کو بھی گرفتار کر لیا گیا کیوں کہ حکومت کی جانب سے تحریک انصاف کا لانگ مارچ روکنے کیلئے شروع کیے گئے کریک ڈاون میں تیزی آ گئی ہے ، پنجاب پولیس نے پنجاب اسمبلی کے سابق اپوزیشن لیڈر اور تحریک انصاف کے سینئر رہنما میاں محمود الرشید کو 16 ایم پی او کے تحت لاہور سے گرفتار کیا ، پی ٹی آئی رہنما کی گرفتار منگل کی رات کو عمل میں لائی گئی .
ادھر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء حماد اظہر نے وزیر اعلیٰ حمزہ شہباز سمیت دیگر حکام کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کر دی ، سابق وفاقی وزیر حماد اظہر کی جانب سے حمزہ شہباز سمیت دیگر حکام کیخلاف عدالتی احکامات نظر انداز کرنے پر لاہور ہائیکورٹ میں توہین عدالت کی درخواست دائر کی گئی ہے ، جس میں کہا گیا ہے کہ عدالتی احکامات کے باوجود ارکان اسمبلی کو گرفتار کیا جا رہا ہے ، حمزہ شہباز ،چیف سیکریٹری پنجاب اور آئی جی پولیس کیخلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں