پاکستانی نژاد زاہد قریشی امریکی تاریخ کے پہلے مسلمان فیڈرل جج بن گئے

واشنگٹن(قدرت روزنامہ) پاکستانی نژاد زاہد قریشی امریکی تاریخ کے پہلے مسلمان فیڈرل جج بن گئے . زاہد قریشی امریکی تاریخ کے پہلے مسلمان ہیں جنہیں صدربائیڈن نے فیڈرل بینچ پر تعینات کیا ہے .

تفصیلات کے مطابق پاکستانی نژاد امریکی جج زاہد قریشی نے ڈسٹرکٹ جج کا منصب سنبھال لیا ہے . غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق زاہد قریشی کی حلف برداری کی تقریب نیوجرسی میں ہوئی جس کے بعد انھوں نے امریکا کے ڈسٹرکٹ جج کا عہدہ سنبھال لیا .
زاہد قریشی امریکی تاریخ کے پہلے مسلمان ہیں جنہیں صدربائیڈن نے فیڈرل بینچ پر تعینات کیا ہے . واضح رہےکہ زاہد قریشی 3 سال سے مجسٹریٹ جج کے فرائض انجام دے رہے ہیں . گورنر مرفی، سینیٹر کوری بوکر اور سینیٹر مینیڈیز کی جانب سے امریکی صدر کے اقدام کی ستائش کی گئی ہے .

واضح رہے کہ رواں ماہ امریکا کی ریاست کیلیفورنیا کے شہر لیور مور میں 72 سالہ بزرگ شہری کی جان بچانے پر مقامی پولیس نے پاکستانی نوجوان بلال شاہد کو ایوارڈ دینے کا اعلان کیا تھا .

امریکی شہر لیورمور میں 72 سالہ شہری واک کرتے ہوئے فٹ پاتھ پر گر پڑے اور بے ہوش ہوگئے، اس دوران وہاں سے فیملی کے ہمراہ گزرنے والے پاکستانی نوجوان بلال شاہد گاڑی روک کر بے ہوش شہری کی مدد کو پہنچے . بزرگ شہری کو سانس لینے میں دشواری ہو رہی تھی اور ان کی نبض بھی ڈوب گئی تھی جس پر بلال نے میڈیکل ایمرجنسی کیلئے ہیلپ لائن پر فون کیا اور شہری کی حالت کا بتایا .
اس دوران فون پر آفیسر نے پاکستانی نوجوان کو بزرگ شہری کو دل کی دھڑکن اور سانس کو بحال کرنے کے ہنگامی طریقہ کار (سی پی آر) کو بروئے کار لاتے ہوئے طبی امداد دینے کا کہا تاہم پاکستانی نوجوان کو ہنگامی طبی امداد کا علم نہ تھا . اس دوران فون پر ہی آفیسر نے طریقہ سمجھایا اور بلال شاہد نے اس طریقے پر عمل کیا اور اتنی دیر میں میڈیکل ٹیم بھی موقع پر پہنچ گئی جہاں بزرگ شہری کو فوری طبی امداد فراہم کی گئی .

. .
Ad
متعلقہ خبریں