ضمنی انتخابات ، پنجاب حکومت کا رینجرز تعینات کرنے کا فیصلہ

لاہور (قدرت روزنامہ) پنجاب حکومت کی جانب سے صوبے میں ضمنی انتخابات کے دوران امن و امان کو یقینی بنانے کے لیے رینجرز تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے . میڈیا رپورٹس کے مطابق رینجرز تعینات کرنے کی منظوری صوبائی سب کیبنٹ کمیٹی برائے امن و امان کے اجلاس میں دی گئی ، اس حوالے سے الیکشن کمیشن اور وفاقی حکومت کو سفارش بھی کر دی گئی ہے .


اس کے علاوہ صوبائی محکمہ داخلہ کی جانب سے لاہور سمیت 11 اضلاع میں 18 جولائی تک دفعہ 144 بھی نافذ کردی گئی ہے ، اس دوران اسلحے کی نمائش پر بھی پابندی ہوگی . ادھر چیف الیکشن کمشنر نے بلدیاتی اور ضمنی انتخابات کی سکیورٹی کیلئے آرمی چیف کو خط لکھ دیا ، مراسلے میں کہا گیا کہ 17جولائی کو پنجاب کے 20 حلقوں اور 26 جولائی کو سندھ کے بلدیاتی انتخابات کیلئے سکیورٹی فراہم کی جائے، سکیورٹی کی درخواست کراچی ، لاہور میں ضمنی انتخابات کے پرتشدد واقعات کے پیش نظر کی گئی .

اے آروائی نیوز کے مطابق چیف الیکشن کمشنر نے سندھ بلدیاتی انتخابات کیلئے سکیورٹی فراہم کرنے کی درخواست کردی، کراچی، لاہور میں ضمنی انتخابات کے پرتشدد واقعات کے پیش نظر سکیورٹی کی درخواست کی جارہی ہے ، مراسلے میں چیف الیکشن کمشنر نے گزشتہ انتخابات میں تسلی بخش سیکیورٹی اقدامات پر پاک فوج کی تعریف کی اور کہا کہ بلدیاتی اور ضمنی انتخابات کی سکیورٹی کیلئے پاک فوج نے مثالی کردار ادا کیا .
دوسری طرف پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ضمنی الیکشن کے حوالے سے باز گشت ہے کہ 18 سیٹیں ن کی 2 پی ٹی آئی کی ہیں ، اس میں وزیبل ہاتھ بھی ہے اور ان وزیبل ہاتھ بھی ہے ، الیکشن کمیشن ذمہ داری سے غافل رہا تو قوم کا مستقبل داؤ پر لگ جائے گا . پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وزیر خارجہ نے کہا کہ یہ الیکشن20 سیٹوں کا نہیں حمزہ شہباز کی وزارت اعلیٰ کا ہے ، اپنی وزارت اعلیٰ کے لیے سب کو جھونک سکتے ہیں ، اگر الیکشن کمیشن ذمہ داری سے غافل رہا اور ضمنی الیکشن میں اپنی ساکھ کھودی تو آج کہہ رہا ہوں جنرل الیکشن آپ دفن کردیں گے ، پھر اس ملک میں عام انتخابات کے نتائج قوم نہیں دیکھے گی ، ڈسکہ کا واقعہ تو سامنے ہے ، خدارا کہیں 20 ڈسکے نہ پیدا کر دیجیے گا .

. .
Ad
متعلقہ خبریں