سندھ بلدیاتی انتخابات: پی پی امیدوار کو مزدور کی بیٹی کے ہاتھوں مات

کراچی(قدرت روزنامہ) سندھ کے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں خیرپور سے تعلق رکھنے والی مزدور کی بیٹی نے پیپلزپارٹی کے امیدوار کو واضح اکثریت سے شکست دی،سندھ میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں پروین شیخ نے بطور آزاد امیدوار الیکشن جیتا،میڈیا رپورٹس کے مطابق بلدیاتی انتخابات میں پروین شیخ نے 430 ووٹ حاصل کیے جبکہ انکے مدمقابل پیپلز پارٹی کے امیدوار منٹھار شیخ صرف 190 ووٹ ہی حاصل کرسکے،پروین شیخ نے میونسپل کمیٹی خیرپور کے وارڈ 1 میں پیپلز پارٹی کے امیدوار منٹھار شیخ کو مات دی،منٹھار شیخ کو سابق وزیر اعلی سندھ قائم علی شاہ اور پیپلز پارٹی کی ایم این اے نفیسہ شاہ کی جانب سے نامزد کیا گیا تھا،برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق پروین شیخ غریب خاندان سے تعلق رکھتی ہیں اور ان کے 6 بچے ہیں،پروین شیخ کے والد پہلے گدھا گاڑی چلاتے تھے لیکن آج کل وہ ریڑھی پربچوں کے کھانے پینےکی اشیاء فروخت کرتے ہیں ،پورٹ میں بتایا گیا کہ پروین کے شوہر وفاقی ادارے میں نچلے گریڈ کے ملازم ہیں،الیکشن سے قبل گفتگو کرتے ہوئے پروین شیخ کا کہنا تھا کہ میں الیکشن جیتنے کے لیے پراعتماد ہوں،میرے والد بھی سیاسی مسائل کی وجہ سے میرے خلاف ہو گئے تھے،سندھ کے 14 اضلاع میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں پاکستان پیپلز پارٹی نے میدان مار لیا ہے، غیر سرکاری و غیر حتمی نتائج کے مطابق جی ڈی اے دوسرے اور پی ٹی آئی تیسرے نمبر پر ہے،نجی ٹی وی کے مطابق غیر سرکاری وغیر حتمی نتائج کے مطابق پی پی نے میونسپل کمیٹی کی 161 نشستیں جیت لی ہیں جبکہ 16 نشستوں پر آزاد امیدوار کامیاب قرار پائے،اعداد و شمار کے تحت جی ڈی اے کو 14 نشستیں ملی ہیں جبکہ پی ٹی آئی کو 6 اور جے یو آئی (ف) کو پانچ نشستوں پر کامیابی ملی ہے .

.

.

Ad
متعلقہ خبریں