لاہورہائیکورٹ نے پی ٹی آئی رہنماء حلیم عادل شیخ کی حراست کو غیرقانونی قرار دے دیا

لاہور(قدرت روزنامہ) لاہور ہائیکورٹ نے تحریک انصاف کے رہنماء حلیم عادل شیخ کی حراست کو غیرقانونی قرار دے دیا، عدالت میں کوئی لیٹر پیش نہیں کیا گیا کہ حلیم عادل کو گرفتار کرنا ہے، عدالت نے حلیم عادل کو رہا کرنے کا حکم دے دیا . جیو نیوز کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں پی ٹی آئی رہنماء حلیم عادل شیخ کی حراست کے خلاف درخواست دائر کی گئی، جس کے تحت لاہور ہائیکورٹ نے حلیم عادل شیخ کی حراست کو غیرقانونی قرار دے دیا، عدالت نے کہا کہ حلیم عادل کی گرفتاری سے متعلق کوئی لیٹر پیش نہیں کیا گیا، عدالت نے خدشے کے پیش نظر حلیم عادل کی 18 جولائی تک حفاظتی ضمانت منظور کرلی ہے،جس کے تحت عدالت نے حلیم عادل کو رہا کرنے کا حکم دے دیا ہے .


یاد رہے اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ کو لاہور سے حراست میں لیا گیا تھا .

اسدعمر نے حلیم عادل شیخ کی گرفتاری کو اغوا قرار د یتے ہوئے کہا کہ صورتحال بار ، بینچ ، میڈیا اور انسانی حقوق کے تنظیموں کیلئے امتحان ہے . عمران اسماعیل نے کہا ہے کہ حلیم عادل شیخ کو کچھ ہوا تو ذمہ دار سندھ حکومت ہو گی جبکہ شہباز گل کا کہنا ہے کہ حلیم عادل شیخ کی گرفتاری لرزتی ہوئی حکومت کی بوکھلاہٹ ہے .

حلیم عادل کو نامعلوم مقام پر رکھا گیا ،عدالت میں پیش نہیں کیاگیا . ان کا کہنا ہے کہ ہتھکڑی عمران ریاض کو نہیں لگائی گئی بلکہ جمہوریت کو لگا دی گئی . جو کچھ ہو رہا ہے یہ ملک کے لیے اچھا نہیں ہو رہا ہے . دوسری جانب ترجمان پی ٹی آئی فواد چودھری کا کہنا ہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے حلیم عادل شیخ کی گرفتاری کو غیر قانونی قرار دے دیا ہے، امید ہے عمران ریاض کو بھی انصاف ملے گا، یہ پیپلز پارٹی جو اب غاصب جماعت ہے اس کی قیادت کے منہ پر زوردار طمانچہ ہے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں