عمران خان کی پنجاب حکومت کو لیگی رہنماؤں کے خلاف مقدمات پر کارروائی تیز کرنے کی ہدایت

اسلام آباد (قدرت روزنامہ) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پنجاب حکومت کو لیگی رہنماؤں کے خلاف مقدمات پر کارروائی تیز کرنے کی ہدایت کر دی ہے . اے آر وائی نیوز کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی زیر صدارت ویڈیو لنک اجلاس ہوا جس میں میں وسطی پنجاب کے صدر ڈاکٹر یاسمین راشد ،سینٹر اعجاز چوہدری اور میاں اسلم اقبال شریک ہوئے .


13اگست لاہور جلسے کے حوالے سے عمران خان کو اجلاس میں بریفنگ دی . اجلاس میں صوبائی حکومت کو ن لیگی رہنماؤں کے خلاف سنگین نوعیت کے مقدمات پر کارروائی تیز کرنے کی ہدایت کی گئی ہے . عمران خان کی زیر صدارت اجلاس میں سانحہ ماڈل ٹاؤن پر مجرمان کو کیفر کردار تک پہنچانے کے لیے پروسیکیوشن کو تیز کام کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ن لیگ کی ضمانتوں پر موجود لیڈروں کی ضمانت خارج کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں .
دوسری جانب وزیر داخلہ پنجاب کرنل ر ہاشم نے تحریک انصاف کارکنوں کے ساتھ زیادتی کا ازالہ نہ ہونے کی صورت میں وزرات چھوڑنے کا اعلان کر دیا . انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ سارے ن لیگ کے لیڈر پنجاب سے بھاگے ہوئے ہیں . اگر میرے پی ٹی آئی کارکنوں کے ساتھ زیادتی کا ازالہ نہ ہوا تو میں عہدہ چھوڑ دوں گا . ہاشم ڈوگر نے مزید کہا کہ مجھے میرے چیف منسٹر پنجاب کا حکم ملا ہے جس نے بھی مئی کے مہینے میں آئین اور قانون شکنی کی ہے اس کو نہیں چھوڑا جائے گا .
چند روز قبل ہاشم ڈوگر سے فواد چوہدری کی ملاقات ہوئی . ملاقات میں ملکی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا . فواد چوہدری نے کہا کہ ضمنی انتخابات نے ثابت کیا کہ پنجاب پی ٹی آئی کا گڑھ ہے . وزیر داخلہ پنجاب ہاشم ڈوگر نے کہا کہ پنجاب کو امن کا گہوارہ بنایا جائے گا . انہوں نے کہا کہ دس محرم کے فوری بعد 25 مئی کے واقعات کے ذمہ داران کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا . ذمہ داران کے خلاف انکوائری کر کے مقدمات درج کیے جائیں گے،اگر عمران خان پر 14 مقدمات ہو سکتے ہیں تو باقی لوگوں پر کیوں نہیں . دوسری جانب فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ محرم کے بعد 25 مئی کا حساب شروع ہوگا .

. .
Ad
متعلقہ خبریں