ملکہ برطانیہ کی آخری رسومات کا اختتام شاہی اعزاز کے ساتھ الزبتھ دوم کی ونڈسر محل میں تدفین کر دی گئی

لندن(قدرت روزنامہ) ملکہ برطانیہ کی آخری رسومات کا اختتام، شاہی اعزاز کے ساتھ الزبتھ دوم کی ونڈسر محل میں تدفین کر دی گئی . تفصیلات کے مطابق ملکہ برطانیہ کی آخری رسومات کی ادائیگی مکمل ہو گئی .

پیر کے روز ملکہ الزبتھ کی تدفین مغربی لندن کے ونڈسر محل میں کر دی گئی . اس موقعے پر کئی ملکوں کے صدور، بادشاہ، شہزادے، وزرائے اعظم موجود تھے .
جبکہ لندن کی سڑکوں پر لوگوں کی بہت بڑی تعداد بھی اکٹھی ہوئی . آخری رسومات کے دوران ملکہ الزبتھ کی زندگی کے ہر سال کے لیے 96 مرتبہ گھنٹی بجائی گئی . اس کے بعد رائل نیوی کے 142 سیلرز مخصوص گاڑی کو رسیوں کی مدد سے کھینچ کر ویسٹ منسٹر ایبی لے گئے . اس کیرج پر ملکہ کا برطانوی پرچم میں لپٹا تابوت رکھا ہوا تھا .
بعد میں تابوت کو گرجا گھر کے اندر لے جایا گیا جہاں عالمی رہنماؤں سمیت دو ہزار کے لگ بھگ افراد ملکہ کی موت کے سوگ میں جمع تھے .

ملکہ برطانیہ کی آخری رسومات میں امریکی صدر جو بائیڈن، پاکستان کے وزیر اعظم شہباز شریف، فرانسیسی صدر ایمانوئل میکروں، تمام زندہ سابق برطانوی وزرائے اعظم اور یورپی شاہی خاندانوں کے لوگوں نے شرکت کی . جبکہ 8 ستمبر کو انتقال کرنے والی ملکہ کے اعزاز میں برطانیہ میں پیر کو عام تعطیل تھی، لاکھوں لوگ اس تاریخی لمحے میں حصہ لینے کے لیے وسطی لندن میں پہنچے .
واضح رہے کہ ملکہ برطانیہ 8 ستمبر کو انتقال کر گئی تھیں . ملکہ برطانیہ کی عمر 96 سال تھی، برطانیہ بھر میں 10 روزہ سوگ کا اعلان کیا گیا . ملکہ الزبتھ دوم کے انتقال سے برطانیہ پر ان کی 70 سالہ طویل بادشاہت کا اختتام ہو گیا، ملکہ اسکاٹ لینڈ میں واقع بالمورال شاہی محل میں موجود تھیں جہاں ان کا انتقال ہوا . ان کے انتقال کے بعد شہزادہ چارلس اب برطانیہ کے بادشاہ کا عہدہ سنبھالیں گے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں