کراچی، شادی کی تقریب میں ہونے والی ہوائی فائرنگ کی زد میں آکر جاں بحق 10 سالہ بچی کے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج

vکراچی (قدرت روزنامہ) اورنگی ٹاؤن میں شادی کی تقریب میں ہونے والی ہوائی فائرنگ کی زد میں آکر جاں بحق 10 سالہ بچی کے والد کی مدعیت میں پیر آباد پولیس نے مقدمہ درج کرلیا .

تفصیلات کے مطابق پیر آباد تھانے کی حدود اورنگی ٹاو ٴن سیکٹر فائیو ایف صدیق اکبر محلہ میں گزشتہ رات شادی کی تقریب کے دوران ہونے والی فائرنگ سے 11 سالہ مدیحہ دختر افضل جاں بحق ہوگئی تھی، جس کی لاش عباسی شہید اسپتال پہنچائی گئی پولیس کے مطابق بچی کو سر پر گولی لگی جو آر پار ہوگئی، واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی، پولیس کے مطابق ابتدائی طور پر بچی کے لواحقین نے لاش کا پوسٹ مارٹم کرانے سے انکار کردیا تھا اور میت اسپتال سے سرد خانے لے گئے تھے، بعدازاں پولیس کارروائی کے لیے چھیپا سرد خانہ پہنچی جس پر لواحقین پوسٹ مارٹم کے لئے راضی ہوگئے، مقتولہ بچی کے لواحقین کے مطابق مقتولہ تین بہن بھائیوں میں دوسرے نمبر پر تھی، علاقے میں سیاسی جماعت کے علاقائی عہدیدار کے بھائی کی شادی کی تقریب تھی، مدیحہ گھر کی کھڑکی سے شادی کی تقریب دیکھ رہی تھی اور کچھ افراد فائرنگ کر رہے تھے کہ اسی دوران ایک اندھی گولی بچی کے ماتھے پر لگی جو آر پار ہوگئی، دوسری جانب مقتولہ مدیحہ کی لاش ایک بار پھر عباسی شہید اسپتال منتقل کی گئی، جہاں بچی کا پوسٹ مارٹم کیا گیا، ایم ایل او عباسی شہید اسپتال ڈاکٹر ام ایمن کے مطابق مدیحہ کو سر کے عقب میں گولی لگی اور ماتھے سے باہر نکلی، بچی کو گولی کافی دور سے لگی تھی، پولیس نے قانونی کارروائی اور پوسٹ مارٹم کے بعد لاش ورثا کے حوالے کردی، تاہم پولیس نے مقتولہ کے والد کی مدعیت میں واقعہ کا مقدمہ درج کرکے ہوائی فائرنگ میں ملوث افراد کی تلاش شروع کردی ہی

.

.

Ad
متعلقہ خبریں