مٹر کھانے کے فوائد اور نقصانات

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)پھلیوں میں شمار کی جانے والی سبزی مٹر موسم سرما میں باآسانی دستیاب ہوتی ہے، مٹر کے چھوٹے چھوٹے دانے صحت کے لحاظ سے نہایت فائدہ مند اور مجموعی صحت کے لیے مفید قرار دیئے جاتے ہیں . غذائی ماہرین کے مطابق مٹر کو ہری سبزی ہونے کے سبب ’پاور فوڈ‘ بھی کہا جاتا ہے، مٹر میں کئی غذائی اجزاء موجود ہوتے ہیں جو کہ انسانی صحت اور تندرستی کے لیے بے حد ضروری ہیں، مٹر میں آئرن، فائبر، پروٹین، وٹامن اے، ایچ، بی، ای اور سی پائے جاتے ہیں .


ماہرین کے مطابق اس میں پروٹین 23فیصد، کاربوہائیڈریٹس 50فیصد جبکہ وٹامن بی کافی مقدار میں پایا جاتا ہے، اس میں سَلفر اور فاسفورس بھی دیگر اجزاء کی نسبت زیادہ مقدار میں موجود ہوتا ہے، مٹر کی تاثیر گرم ہوتی ہے جبکہ یہ جسم کو غذائیت پہنچا کر پٹھوں اور اعصاب کو مضبوط بناتا ہے . غذائی ماہرین کا کہنا ہے کہ مٹر ہر عمر کے فرد کے لیے مفید سبزی ہے مگر اسے وزن میں کمی لانے کے خواہشمند افراد کے لیے مفید قرار نہیں دیا جاتا ہے .
فٹنس و غذائی ماہرین کے مطابق مٹر میں غذائیت اور کیلوریز کی بھاری مقدار پائی جاتی ہے، اگر کوئی شخص ڈائیٹ پلان کے تحت سوپ یا کوئی اور سبزیوں پر مبنی سالاد کھا رہا ہے تو ایسی صورت میں مٹر کا استعمال کرنا مطلوبہ وزن میں کمی کے لیے نقصان دہ ثابت ہو سکتا ہے .

. .
Ad
متعلقہ خبریں