گلیات میں برفباری کا طوفان، 3 افراد جاں بحق

اسلام آباد (قدرت روزنامہ)گلیات میں برف باری کے طوفان کے باعث 3 افراد جاں بحق ہوئے ہیں، تمام راستے بند ہیں، سیاحوں کو نتھیا گلی سمیت گلیات نہ جانے کی ہدایت کی گئی ہے . ڈی آئی جی ہزارہ کا کہنا ہے کہ گلیات کے داخلی و خارجی راستوں کو ٹریفک کے لیے بند کر دیا گیا ہے، نتھیاگلی جانے والے افراد کو واپس بھیجا جا رہا ہے .

انہوں نے بتایا کہ گلیات سے مری جانے والے پھنسے ہوئنے سیاحوں کو ہوٹلوں میں منتقل کر دیا گیا ہے . صوبۂ خیبر پختون خوا کے معاونِ خصوصی برائے اطلاعات بیرسٹر سیف نے بتایا ہے کہ گلیات میں 6 فٹ تک برف پڑ چکی ہے اور یہاں برفانی طوفان کے باعث آمد و رفت بند ہے .
انہوں نے بتایا کہ گلیات میں درجنوں گاڑیوں کو ریسکیو کر دیا گیا ہے، ہوٹلز مالکان کو سڑکیں کھلنے تک سیاحوں کو چیک آؤٹ نہ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے . کمشنر ہزارہ مطہر زیب نے ’جیو نیوز‘ کو بتایا کہ گلیات میں برف میں پھنسی ساڑھے7 ہزار گاڑیوں کو نکال دیا گیا ہے، سیاحوں کو ہوٹلوں اور محفوظ مقامات پر منتقل کیا جا رہا ہے . انہوں نے بتایا کہ گلیات کے ہوٹلوں میں 1500 کمرے ہیں، جھینگا گلی میں ساڑھے 6 فٹ برف پڑی ہے .
کمشنر ہزارہ مطہر زیب نے یہ بھی بتایا کہ جھینگا گلی سے مری تک روڈ کو صاف کر رہے ہیں، نتھیا گلی تک روڈ مکمل طور پر بند ہے، جس پر 5 فٹ برف موجود ہے . ادھر مری اور گلیات میں شدید برف باری کے دوران آئی جی پنجاب راؤ سردار علی نے پولیس کو برف باری میں پھنسے سیاحوں کی ہنگامی بنیادوں پر مدد کرنے کا حکم دے دیا . آئی جی پنجاب کا کہنا ہے کہ آر پی او، سی پی او اور سی ٹی او راولپنڈی مری میں موجود ہیں، انہیں ہدایت کی جاتی ہے کہ خواتین، بچوں اور بزرگوں کو فوری طور پر محفوظ مقام پر پہنچایا جائے .
انہوں نے ہدایت کی کہ پھنسے ہوئے لوگوں کو کمبل، گرم کپڑے اور خوراک کی ترسیل یقینی بنائی جائے، آر پی او راولپنڈی سارے آپریشن کی خود نگرانی کریں . آئی جی پنجاب راؤ سردار علی نے پنجاب ہائی ویز پولیس کو ہیوی مشینری مری پہنچانے کا حکم بھی دیا . اسلام آباد سے مری جانے والے راستے پر شدید ٹریفک جام ہے، سترہ میل کے علاقے پر رینجرز نے راستہ بند کر دیا ہے . مختلف شہروں سے آئے سیاحوں کی گاڑیاں سترہ میل پر رک گئیں، اس موقع پر رینجرز کی جانب سے شہریوں کو واپس اسلام آباد جانے کی تلقین کی گئی .

. .
Ad
متعلقہ خبریں