انٹربینک میں ڈالر مزید مہنگا ہوگیا

اسلام آباد(قدرت روزنامہ)آج کاروبار کے آغاز میں ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے . تفصیلات کے مطابق امریکی ڈالر کی اڑان سلسلہ جاری جبکہ پاکستانی روپے کی قدرو قیمت مزید زوال کا شکار ہے .

آج آخری کاروباری روزکے آغاز سے ہی ڈالر کی قدر میں مزید اضافہ ہوا ہے .

انٹر بینک میں ڈالر 12 پیسے مہنگا ہونے کے بعد 236 روپے کا ہو گیا ہے . خیال رہے کہ گزشتہ روز امریکی ڈالر کے مقابلے پاکستانی روپیہ ہر گذرتے دن کیساتھ کمزور ہو رہا ہے جس کی وجہ سے ڈالرکی قدر ایک بار پھر تیزی سے بڑھ رہی ہے . جمعرات کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر1.50روپے جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر2روپے مہنگا ہو گیا . فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق انٹر بینک میں ڈالر کی قیمت فروخت 234.75روپے سے بڑھ کر236.25روپے ہو گئی اسی طرح2روپے کے اضافے سے مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالرکی قیمت فروخت 239روپے سے بڑھ کر 241روپے ہو گئی . فاریکس رپورٹ کے مطابق یورو 3.40روپے مہنگاہو گیا جس سے یورو کی قیمت فروخت240روپے سے بڑھ کر243.40روپے ہو گئی اسی طرح4.80روپے کے نما یاں اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت فروخت278روپے سے بڑھ کر 282.80روپے ہو گئی . سیاسی افق پرچھائی غیر یقینی صورتحال،حکومت کی جانب سے معیشت کو مستحکم کرنے کیلئے مزید قرضہ لینے کی توقعات اورپاکستان کیلئے500 ملین ڈالر ایشین ڈویلپمنٹ بینک کی منظوری سے مشروط کئے جانے کے خبروں پر سرمایہ کارگھبراہٹ کا شکار ہے جس کی وجہ سے پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو مندی کے بادل چھائے رہے اور مارکیٹ ایک بار پھر42ہزار پوائنٹس کی

نفسیاتی حد سے گر گئی جبکہ مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 46ارب روپے سے زائد ڈوب گئے جس کی وجہ سے سرمائے کا مجموعی حجم 69کھرب روپے سے گھٹ کر 68کھرب روپے رہ گیا،مندی کے سبب60.41فیصد حصص کی قیمتیں بھی کم ہو گئیں . پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو کاروبار کے آغاز پر تیزی کا رجحان غالب رہا اور ٹریڈنگ کے

دوران انڈیکس 42312پوائنٹس کی سطح کو چھو گیا تاہم پرافٹ ٹیکنگ کے عنصر نے مارکیٹ کو منفی زون میں دھکیل دیا . پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو کے ایس ای100انڈیکس میں 239.73پوائنٹس کی کمی واقع ہوئی جس سے انڈیکس 42011.82پوائنٹس سے گھٹ کر 41772.09پوائنٹس ہو گیا اسی طرح 72.63پوائنٹس کی کمی سے کے

ایس ای 30انڈیکس 15757.50پوائنٹس سے کم ہو کر15684.87پوائنٹس پر آگیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 28765.34پوائنٹس سے گھٹ کر28573.22پوائنٹس پر بند ہوا . کاروباری مندی سے مارکیٹ کے سرمائے میں 46ارب28کروڑ83لاکھ96ہزار999روپے کی کمی واقع ہوئی

جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجموعی حجم 69کھرب31ارب 67کروڑ94لاکھ25ہزار128روپے سے کم ہو کر68کھرب85ارب39کروڑ10لاکھ28ہزار129روپے رہ گیا . پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو 10ارب روپے مالیت کے 25کروڑ99لاکھ79ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ بدھ کو6ارب روپے مالیت کے 15کروڑ65لاکھ81ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے .

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ روز مجموعی طور پر 341کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے114کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ، 206میں کمی اور21کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا . کاروبار کے لحاظ سے ٹی آر جی پاک لمیٹڈ 2کروڑ74لاکھ،ورلڈ کال ٹیلی کام 2کروڑ16لاکھ،

ٹی پی ایل پراپرٹیز 2کروڑ14لاکھ،فیصل بینک 1کروڑ12لاکھ اور کے الیکٹرک لمیٹڈ 1کروڑ11لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے . قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے سیفائر ٹیکسٹائل کے بھاؤ میں 20.01روپے کا اضافہ ہوا جس سے اسکے حصص کی قیمت 1119.99روپے ہو گئی

اسی طرح 12.89روپے کے اضافے سے سیمنس پاک کے حصص کی قیمت 712.90روپے پر جا پہنچی جبکہ بہنیرو ٹیکسٹائل کے بھاؤ میں 97.50روپے کی کمی واقع ہوئی جس سے اسکے حصص کی قیمت 1202.50روپے ہو گئی اسی طرح78.00روپے کی کمی سے سیفائر فائبر کے حصص کی قیمت1001.00روپے پر آ گئی .

. .
Ad
متعلقہ خبریں